اسلام آباد: مورخہ 22جون 2020
 
وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود سے آج ٹیلی فون پر گفتگو کی ۔ دونوں وزراءخارجہ نے باہمی دلچسپی کے امور، کورونا وبائ، دو طرفہ تعاون میں مزید اضافے اور بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔
 
وزیر خارجہ نے پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان برادرانہ تعلقات کو اجاگر کرتے ہوئے کہاکہ دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعاون اور سٹرٹیجک شراکت داری مزید فروغ پارہی ہے۔ 
 
وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے پی آئی اے طیارے کے حادثے پر تعزیتی پیغام بھجوانے پر عزت مآب سعودی فرمانرا اور ولی عہد کا شکریہ اداکیا۔ 
 
وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کورونا وباءکے باعث سعودی عرب میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر رنج وغم اور افسوس کا اظہارکیا اور اس وبا کی روک تھام کے لئے پاکستان میں کئے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ حکومت پاکستان کی ترجیح اور توجہ عوام کی جان اور روزگار دونوں بچانا ہے۔ دونوں وزراءخارجہ نے کورونا وباءکے نتیجے میں پیدا ہونے والے سماجی واقتصادی مسائل پر بھی خیالات کا تبادلہ کیا۔ وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کورونا وبا سے نمٹنے کے لئے پاکستان کی کوششوں کی حمایت کی۔ 
 
بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے تناظر میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے مسلسل لاک ڈاون، بھارتی قابض افواج کی جانب سے فوجی چھاپوں، کارروائیوں میں اضافے اور نئے ڈومیسائل قانون کے ذریعے مقبوضہ خطے میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی کوششوں پر گہری تشویش کااظہارکیا۔ وزیر خارجہ نے ’او۔آئی۔سی‘ اور دیگر عالمی اداروں کی جانب سے حالیہ بیانات کا خیرمقدم کیا جن میں بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں درپیش صورتحال سے نبردآزما ہونے کے لئے فوری اقدامات کا تقاضا کیاگیا اور گہری تشویش ظاہر کی گئی۔ سعودی وزیر خارجہ نے کشمیر کاز کے لئے سعودی عرب کی روایتی حمایت کا اعادہ کیا۔ 
 
دونوں وزراءخارجہ نے اہم دوطرفہ ایجنڈے پر پیش رفت اور مختلف شعبہ جات میں قریبی تعاون کے فروغ کے لئے باہمی رابطہ برقرار رکھنے پر اتفاق کیا۔ 
266/2020
Close Search Window